16:47 - April 13, 2016
۱
خبر کا کوڈ: 3500589
بین الاقوامی گروپ:امریکی سینیٹر نے صدر اوباما سے کہا ہے کہ وہ گیارہ ستمبر کے واقعات میں سعودی عرب کے ملوث ہونے سے متعلق دستاویزات کو منظرعام پرلائیں
ایکنا نیوز-سحرٹی وی - امریکی سینیٹرکرسچین گیلیبرنڈ نے برطانوی اخبار اینڈیپنڈنٹ کی اس رپورٹ کا حوالہ دیتے ہوئے کہ جس میں کہاگیا ہےکہ گیارہ ستمبر کی رپورٹ کا بعض حصہ سیکورٹی وجوہات کی بناپر عام نہیں کیاگیا ہے، امریکی صدر باراک اوباما سے کہا ہے کہ وہ گیارہ ستمبر دوہزار ایک کےواقعات کی خفیہ رپورٹ کو عام کریں - برطانوی اخباراینڈیپنڈنٹ نے چندروز قبل لکھاتھا کہ گیارہ ستمبر کے واقعات سے متعلق ریپبلیکن اور ڈیموکریٹس نمائندوں پر مشتمل کمیٹی نے سن دوہزارتین میں آٹھ سوصفحات پرمشتمل جو رپورٹ تیار کی تھی اس میں سے اٹھائیس صفحات کو سیکورٹی وجوہات کی بناپر شا‏‏ئع نہیں کیا گیا - امریکا کے سابق سینیٹر باب گراہم نے بھی جو اس کمیٹی میں شامل تھےاس بارے میں کہا ہے کہ اس رپورٹ میں ان لوگوں کانام ذکرکیاگیا ہے جنھوں نے حملوں میں ملوث سعود ی شہریوں کو ورلڈٹریڈ سینٹر اور پنٹاگون پر حملے کے لئے ہوابازی کی ٹریننگ دی تھی - سابق امریکی سینیٹرباب گراہم نے یہ بھی کہا ہے کہ گیارہ ستمبرکےدہشت گردانہ حملے انجام دینے والے دہشت گردوں کی سعودی عرب نے مالی مدد کی تھی - ریاست فلوریڈا کے سابق رکن کانگریس پورٹر گوس نے بھی کہا ہے کہ گیارہ ستمبر کے واقعات میں سعود ی عرب کےکردارکو سیاسی وجوہات کی بنا پر پوشیدہ رکھا گیا ہے کیونکہ اس وقت کے امریکی صدرجارج بش کی کوشش تھی کہ امریکا اور سعودی عرب کے تعلقات خراب نہ ہوں-
منتشر شده: 1
زیر غور: 3
غیرقابل اشاعت: 0
عبدالباسط، چینیوٹ
0
0
سعودی عرب پوری دنیا میں شدت پسندانہ افکار کا مرکز ہے یہ تو سب کو پتہ ہے مگر سیاسی مصلحتیں ہمیشہ رہی ہیں
نام:
ایمیل:
* رایے: